متنازعہ بیان، پارٹی نے شوکاز نوٹس دیدیا

بغیر تولے بولنا رانا مشہود کے گلے پڑ گیا۔ ن لیگی رہنما رانا مشہود کے بیان پر پارٹی نے انہیں شوکاز نوٹس جاری کردیا۔ ن لیگی رہنما ملک احمد خان نے رانا مشہود کو شوکاز نوٹس ملنے کی تصدیق کردی۔

پنجاب اسمبلی کے باہر میڈیا سے گفت گو میں ن لیگی رہنما رانا مشہود اپنے ہی بیان سے مکر گئے۔ رانا مشہود نے اسٹیبلشمنٹ سے ڈیل سے متعلق بیان کی نفی کردی۔

 

رانا مشہود کا کہنا تھا کہ جس جس نے انٹرویو دیکھا وہ ہی اس پر تبصرہ کریں، جو بات کہی تھی اسے سیاق و سباق سے ہٹ کر پیش کیا گیا، بیان میری ذاتی رائے تھا۔ اس موقع پر صحافیوں کی جانب سے رانا مشہود پر تابڑ توڑ سوالات کے حملے کیے گئے۔

 

رانا مشہود کا مزید کہنا تھا کہ ہم نے ہمیشہ چور دروازوں سے آنے والوں کے خلاف بات کی، نہ ہم نے کبھی ڈیل کی ہے نہ کسی کو کرنے دیں گے، 50 دن میں ملک کا برا حال کردیا ہے، ہم نے ہمشیہ اداروں کی عزت کی بات کی ہے، ہم نے ہمشیہ عوامی جذبات کی ترجمانی کی ہے۔

 

اس موقع پر ایک بار اپنے گزشتہ بیان کا ذکر کرتے ہوئے رانا مشہود نے کہا کہ جنہیں گھوڑا سمجھا گیا، وہ خچر نکلے اس بات پر قائم ہوں۔ رانا مشہود کے ہمراہ موجود ن لیگی رہنما ملک احمد خان کا کہنا تھا کہ پارٹی نے رانا مشہود کے بیان پر نوٹس لیتے ہوئے شوکاز ایشو کیا ہے، اگر رانا صاحب کی بات سے یہ تاثر ابھرا ہے تو رانا مشہود اس بات کی واضح کریں گے۔

 

واضح رہے کہ ن لیگی رہنما رانا مشہود نے دو اکتوبر کو سماء کو دیئے گئے خصوصی انٹرویو میں کہا تھا کہ اسٹیبلشمنٹ سے ہمارے معاملات ٹھیک ہوگئے ہیں، معاملات سلجھانے میں شہباز شریف نے اہم کردار ادا کیا، ہم اہنگی ہوئی ہے، ادارے بھی ملک کی بہتری کا سوچتے ہیں، اسٹیبلشمنٹ کو شہباز شریف کے وزیراعظم نہ بننے کا افسوس ہے، اگر شہباز شریف وزیراعظم ہوتے تو حالات بہتر ہوتے، اداروں کے تھنک ٹینکس کو اب صورت حال کا ادراک ہورہا ہے، پہلے معاملات درست نہ ہوسکے کیونکہ صورت ال مختلف تھی، طے ہوا ہے جس ادارے کا جو کام ہے وہ اپنا کام کرے گا، حالات ٹھیک ہونے تک نواز شریف اور مریم نواز کا لہجہ سخت ہی رہے گا۔ اس موقع پر انہوں نے یہ دعوی بھی کیا کہ 2 ماہ بعد پنجاب میں ن لیگ دوبارہ حکومت بنا سکتی ہے۔

YOUR REACTION?



Facebook Conversations



Disqus Conversations