نواز شریف کے جسم میں پانی کی کمی، گردے فیل ہونے کا خدشہ: میڈیکل رپورٹ

راولپنڈی: ایون فیلڈ ریفرنس میں سزا یافتہ سابق وزیراعظم نواز شریف کی طبی رپورٹ سامنے آگئی جس میں بتایا گیا ہے کہ ان کے جسم میں پانی کی کمی کے باعث گردے فیل ہونے کا خدشہ ہے۔

اڈیالہ جیل میں گزشتہ رات نواز شریف کی طبیعت خراب ہونے پر ڈاکٹر اظہر کیانی اور ڈاکٹر حامد شریف خان نے ان کا طبی معائنہ کیا۔

میڈیکل رپورٹ کے مطابق زیادہ پسینے کی وجہ سے نواز شریف کے جسم میں پانی کی کمی ہے جب کہ گرمی اور کم نیند نے بھی ان کی صحت کو متاثر کیا۔

رپورٹ میں بتایا گیا کہ نواز شریف کے جسم میں پانی کی کمی کے باعث گردے فیل ہونے کا خدشہ ہے، اگر صورتحال میں بہتری نہ آئی تو ان کے دل کا مرض بڑھ سکتا ہے۔

میڈیکل رپورٹ میں تجویز دی گئی ہے کہ صورتحال کے پیش نظر نواز شریف کو راولپنڈی انسٹیٹیوٹ آف کارڈیالوجی منتقل کیا جائے۔

ادھر آئی جی جیل خانہ جات کی درخواست پر نواز شریف کے علاج کے لیے 5 رکنی میڈیکل بورڈ بھی تشکیل دے دیا گیا۔

دستاویزات کے مطابق نواز شریف کا علاج کرنے والے میڈیکل بورڈ کے انچارج ڈاکٹر اعجاز قدیر ہیں جب کہ ڈاکٹر شجیع صدیقی، ڈاکٹر نعیم ملک، ڈاکٹر سہیل تنویر اور ڈاکٹر مشہود بھی میڈیکل بورڈ کے ممبرز ہیں۔

جیل ذرائع کا کہنا ہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف کو طبی معائنے کے لیے سیل سے نکال کر جیل اسپتال منتقل کردیا گیا ہے جہاں پمز اسپتال کی میڈیکل ٹیم موجود ہے۔

ذرائع کے مطابق نواز شریف کے علاج کے لیے میڈیکل ٹیم جدید موبائل لیبارٹری بھی ہمراہ لے کر آئی ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ سابق وزیراعظم کو اسپتال منتقل کرنے یا نہ کرنے سے متعلق فیصلے کے لیے آج مزید مشاورت ہوگی۔


یاد رہے کہ 6 جولائی کو احتساب عدالت نے ایون فیلڈ ریفرنس میں سابق وزیراعظم نواز شریف کو مجموعی طور پر 11 سال اور 80 لاکھ پاؤنڈ جرمانہ، ان کی صاحبزادی مریم نواز کو 8 سال قید اور 20 لاکھ پاؤنڈ جرمانہ جبکہ داماد کیپٹن (ر) صفدر کو ایک سال قید کی سزا سنائی تھی۔

دوسری جانب عدالت نے ایون فیلڈ اپارٹمنٹس کو ضبط کرنے کا بھی حکم دیا۔

عدالتی فیصلے کے بعد سابق وزیراعظم نواز شریف اور ان کی صاحبزادی مریم نواز 13 جولائی کو لندن سے واپس لاہور پہنچے جہاں انہیں جہاز سے ہی نیب نے گرفتار کر کے اسلام آباد منتقل کیا۔

بعدازاں نواز شریف اور ان کی بیٹی کو اڈیالہ جیل بھیج دیا گیا جہاں وہ اپنی سزا پوری کررہے ہیں۔

YOUR REACTION?



Facebook Conversations



Disqus Conversations